طارق جمیل کے ساتھ ملاقات پر افغان کرکٹ شائقین ناراض؛ کھلاڑیوں پر شدید تنقید اور غصہ

گزشتہ رات شارجہ میں افغانستان کرکٹ ٹیم کی کھلاڑیوں کی ممتاز عالم دین مولانا طارق جمیل سے ملاقات پر افغانستان کرکٹ شائقین نے اپنے کھلاڑیوں  کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔
کل کی اس ملاقات کی ویڈیو کو مولانا طارق جمیل کی افیشل فیسبوک پیج پر پوسٹ کی گئ ہیں ۔
اس ویڈیو میں نظر ارہا ہے کہ  وکٹ کیپر شہزاد محمدی کے ساتھ دیگر افغان کرکٹ مولانا طارق جمیل کے ساتھ بھیٹے ہوئے ہیں اور اردو میں باتیں کر رہے ہیں۔
اس ویڈیو کے بعد  افغان شائقین کرکٹ نے افغان کرکٹ بورڈ سے  فوری طور  ان کھلاڑیوں کیخلاف کاروائی کا مطالبہ کیا ہے۔   اور شہزاذ محمدی کو شدید نفرت اور تنقید کا نشانہ بنایا گیا ہے۔
ابوبکر نامی ایکٹیویسٹ نے اپنی فیس بوک پر لکھا ہے کہ مولانا طارق جمیل نے کبھی افغانستان میں ہر سال دھماکوں میں ہزاروں بے گناہ مسلمانوں کی موت   پر افسوس تک نہیں کیا ہے مگر کھلاڑیوں کے ساتھ مل کر دین سیکھانے کی ایکٹنگ کر رہا ہے۔
ایک دوسرے ایکٹیویسٹ نے لکھا ہے ہم پشتونوں نے ان لوگوں کو اسلام سکھایا ہے اور اج یہ ہمارے کھلاڑیوں کو نماز کے طریقے سکھانا عجیب ہے۔
ستوری نامی ایک ایکٹیویسٹ نے لکھا ہے کہ طارق جمیل کی ملاقات دبئ میں افغان کرکٹ لیگ کیخلاف سازش ہے۔
 شہزاد محمدی نے اس حوالے سے کچھ نہیں کہا ہے مگر طارق جمیل کے ساتھ ملاقات پر شائقین کرکٹ نے شدید ناراضگی اورغصے کا اظہار کیا ہے۔

اړوندې ليکنې د ليکوال نورې ليکنې

تبصره وليکئ

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.