سندھ حکومت کا رینجرز کو اختیارات نہ دینا کراچین کو ایک بار پھر دہشت گردوں کے حوالے کرنے کی سازش ہے

رینجرز کو اختیارات صرف کراچی میں نہیں بلکہ پورے سندھ میں دئیے جائیں اور کراچی کی طرز کا ٹار گٹڈ آپر یشن پورے سندھ میں دہشت گردو کہ خلاف کیا جائے (علامہ ناظر عباس تقوی)

گز شتہ کئی سالوں سے کراچی میں جاری ٹار گٹڈ کلنگ میں کمی آنا اور دہشت گردوں کے نیٹ ورک کو توڑنے میں رینجرز کے کردار کو سر اہتے ہیں (علامہ ناظر عباس تقوی)

تمام سیاسی اور مزہبی پارٹیوں کو بھی چائیے کہ ملک بھر میں قیام امن کے لئے اپنا مثبت کردار ادا کریں اور دہشت گردو کو منطقی انجام تک پہچانے کے لئے اپنی اپنی ذمہ داریوں کو ادا کریں (علامہ ناظر عباس تقوی)

کراچی(دی پشتون ایکسپریس ) شیعہ علماء کو نسل پاکستان صوبہ سندھ کے صدر علامہ سید ناظر عباس تقوی کہنا ہے کہ سندھ حکومت کی جانب سے رینجرز کو اختیارات نہ دینا شہر کراچی کو ایک بار پھر بد امنی کی طرف لے جانے کی شازش ہے شہر کراچی میں امن وامان کے قیام میں رینجرز کا کردار کلیدی رہا ہے لہذاں حکومت سندھ کو چائیے کہ رینجرز کو اختیارات صرف کراچی میں نہیں بلکہ پورے سندھ میں دئیے جائیں اور کراچی کی طرز کا ٹار گٹڈ آپر یشن پورے سندھ میں دہشت گردو کہ خلاف کیا جائے اور یہ آپر یشن سیاسی مصلحتوں سے بالاء ہونا چائیے اگر اسی طرح حکومت اختیارات کے مسئلے پر رسہ کشی کا کھیل کھیلتی رہی اور کوئی دلخراش سانحہ وقوع پزیر ہوا تو اس کی تمام تر ذمہ داری حکومت سندھ پر عائد ہوگی گز شتہ کئی سالوں سے کراچی میں جاری ٹار گٹڈ کلنگ میں کمی آنا اور دہشت گردوں کے نیٹ ورک کو توڑنے میں رینجرز کے کردار کو سر اہتے ہیں اور ڈی رینجرز سندھ سے امید کرتے ہیں کہ وہ اندرون سندھ میں بھی دہشت گردو کہ نیٹ ورک کو توڑنے میں اپنابھر پور کردار ادا کر یں گے تمام سیاسی اور مزہبی پارٹیوں کو بھی چائیے کہ ملک بھر میں قیام امن کے لئے اپنا مثبت کردار ادا کریں اور دہشت گردو کو منطقی انجام تک پہچانے کے لئے اپنی اپنی ذمہ داریوں کو ادا کریں تا کہ شہر اور اس ملک کو دہشت گردی کے بحران سے نکال کر ملک کو امن کا گہوارہ بنا یا جائے تاکہ اس ملک میں رہنے والے امن وسکون کے ساتھ اپنی اپنی زندگی بسر کر سکے

You might also like More from author

تبصره وليکئ